En

پاکستان کے ہمالیائی سالٹ کی  چینی مارکیٹ میں دھوم

By Staff Reporter | Gwadar Pro Nov 13, 2021

  بیجنگ :پاکستان کے ہمالیائی سالٹ نے چینی مارکیٹ میں دھوم مچا  دی   ۔چوتھی چائنا انٹرنیشنل امپورٹ ایکسپو (CIIE)حال ہی میں منعقد  ہوئی  جس میں    پاک فارسی سالٹ لیک بوتھ کے انچارج میاں محمد زبیر نے چائنہ اکنامک نیٹ   کو   روانی سے چینی زبان میں پرجوش انداز میں بتایا  کہ   میں نے اتنے دنوں میں چار بیچ فروخت کیے ہیں، صرف 6 نومبر کو، 50 سے زائد نمک کے لیمپ گاہکوں کو فروخت کیے گئے  یہ دوسری بار  سی ای ین  کے  صحافیوں نے بوتھ کا دورہ کیا۔ پچھلی بار کے برعکس، شیلفوں پر بہت سے  سالٹ  لیمپوں پر ''بک شدہ'' کا لیبل لگا دیا گیا ہے، یہاں تک کہ زمین پر موجود مہنگے بڑے لیمپ کو بھی کچھ سخی گاہکوں کے لیے مخصوص کر دیا گیا ہے۔ ان  لیمپوں  کے لیے پنجاب کے کھیوڑہ سالٹ مائن   کے  نمک کا استعمال  جاتا ہے جو کہ ہمالیائی  پنک  سالٹ  کی دنیا میں سب سے بڑی پیداوار ہے۔  دنیا میں نمک کے دوسرے بڑے ذخائر کے طور پر، کھیوڑہ کی کان میں ایک اندازے کے مطابق 1 بلین ٹن سے زیادہ نمک کا ذخیرہ موجود ہے۔ 1838 میں کان کنی شروع ہونے کے بعد سے، سالانہ 350,000 ٹن سے زیادہ چٹانی نمک تیار کیا گیا ہے جس کی خالصیت 98  فی صد ہے۔  خوردنی  پنک سالٹ ،  سالٹ  لیمپ،  باتھ سالٹ ، سالٹ برکس  وغیرہ جیسی مصنوعات کی ایک وسیع رینج   تیار ہونے کے بعد  چین، برطانیہ، امریکہ اور دیگر کئی ممالک کو برآمد  کی جاتی ہے، جس سے دنیا بھر میں نام پیدا ہوتا ہے۔ چینی  کسٹمز کے مطابق  چین نے 2020 کی پہلی ششماہی میں   12.2 ملین آ ر ایم بی  (33 کروڑ روپے) مالیت کا ہمالیائی  سالٹ     پاکستان سے    درآمد کیا۔زبیر نے کہا   پاکستان میں گلابی، کالا اور سفید نمک موجود ہے۔ کالے نمک کے لیمپ نایاب ہیں، لیکن چین میں گلابی رنگ زیادہ مقبول ہیں''، زبیر نے کہا۔ ان کے مطابق، CIIE میں سیاہ نمک کے لیمپ  پہلی بار لائے گئے  ۔ ہمالیائی سالٹ لیمپ دنیا کی دوسری سب سے بڑی کنزیومر مارکیٹ میں تعاقب کی جانے والی مصنوعات ہے۔ پاک پرشین بوتھ پر صحافیوں کے رکنے کے پانچ منٹ کے اندر، کم از کم تین چینی خریداروں نے دریافت کیا اور  سالٹ  لیمپ خریدے۔ ایک چینی خریدار نیبڑے پیمانے پر صحت ہیلتھ  انڈسٹری  کے حوالے سے  کہا ہم اسے  رہائش والے کمرے میں رکھنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ بعد میں ہم ایک کمرے کو  سالٹ روم میں تبدیل کر سکتے ہیں۔ ہم نمک کو نہانے کے لیے بھی استعمال کر سکتے ہیں  ۔ ایک بڑے چینی ای کامرس پلیٹ فارم پر، پاکستان میں بنے ہمالیائی سالٹ لیمپ چین کے ڈبل گیارہ (نومبر 11) کے سالانہ شاپنگ فیسٹیول کا حصہ ہیں۔ بہت سے چینی صارفین نے   سالٹ  لیمپ کو  سراہا ۔ چینی خریداروں کا جوق در جوق  سالٹ  لیمپ کے لیے ان  کے جوش و خروش کی عکاسی کرتا ہے۔ چین میں ایک بڑے ای کامرس پلیٹ فارم پر 600 سے زیادہ اشیاء کو ''ہمالیہ سالٹ لیمپ'' کے زمرے میں دکھایا گیا ہے۔اعلی درجے کے اسٹورز ہر ماہ ہزاروں لین دین کے ساتھ ساتھ تبصرے بھی دیکھ رہے ہیں۔ اس خاص بازار میں 4 سے 5 کلومیٹر وزنی نمک کے لیمپ   118  آ ر ایم بی (تقریباً 3,145 روپے) سب سے زیادہ فروخت ہونے والے ہیں۔ جن کا وزن 100 کلوگرام سے زیادہ ہے ان کی قیمت   13,000 آ ر ایم بی  (تقریباً 350,000 روپے) ہے۔ نمک کے لیمپ کے علاوہ، چینی مارکیٹ میں گلابی نمک بھی زیادہ مقبول ہے۔چونگ بائی  انویسٹمنٹ گروپ  کمپنی لیمیٹڈکے پروجیکٹ ڈائریکٹر ژو ون چھی   نے انکشاف کیا کہ پاکستان کا  ہمالیائی گلابی نمک  اس سال سی آئی آئی ای  کے لیے ہماری فیچر پروڈکٹ ہے۔   پاکستانی گلابی نمک ماربل جیسی ظاہری شکل اور رنگ کے ساتھ ساتھ پروسیسنگ اور پروڈکشن ٹیکنالوجی سے بھی الگ ہے۔ اس کے علاوہ  ہمالیہ کی طرف لوگوں کی تعریف ان کی اپیل میں اضافہ کرتی ہے۔  ژو نے کہا ہمارے پاس نمک فروخت کرنے کا کئی دہائیوں کا تجربہ ہے۔ ہم نے چینی مقامی  نمک بیچنا شروع کیا اور پھر آسٹریلوی سمندری نمک کو درآمد کیا۔ چینی مارکیٹ میں سمندری نمک کی مصنوعات میں اضافے کے ساتھ، معدنی نمک اور گہرے پہاڑی نمک کو چین میں زیادہ سے زیادہ قبول کیا جا رہا ہے، خاص طور پر ساحلی علاقوں میں ۔ تیانجن کے ایک پیشہ ور خریدار نے بتایا کہ چین میں عام طور پر نمک میں آئوڈین شامل کی جاتی ہے۔ ساحلی علاقوں کے لوگوں میں آیوڈین کی مقدار زیادہ ہوتی ہے، اور آیوڈین والا نمک کھانے سے ان میں ہائپر تھائیرائیڈزم ہونے کا امکان ہوتا ہے، اس لیے انہیں آئوڈین سے پاک نمک کھانے کی ضرورت ہے، اس نے سی ای این کو  بتایا کہ میں  نے 2016 میں ہمالیائی گلابی نمک کھانا شروع کیا۔ چین کے بڑے ای کامرس پلیٹ فارم پر ''گلابی نمک'' کی تلاش سے 160,000 سے زیادہ اشیاء برآمد ہوئیں۔ سب سے زیادہ فروخت ہونے والے ہمالیائی گلابی نمک پر 20,000 سے زیادہ صارفین کے تبصرے ہیں۔ گلابی نمک کی ایک بوتل کا وزن 1.5 کلو گرام ہے اور اس کی قیمت 79  آ ر ایم بی  یا تقریباً 2,105 پاکستانی روپے ہے، جو چین میں عام خوردنی نمک کی قیمت سے تقریباً سات گنا زیادہ ہے۔ گلابی نمک کے علاوہ چینی نمائش کنندگان نے پاکستانی گلابی نمک مکسڈ پراڈکٹس کو بھی متعارف کرانے میں پہل کی۔  سی آئی آئی  میں  رپورٹر نے سب سے پہلے گلابی نمک اور کالی مرچ، گلابی نمک اور روزمیری، گلابی نمک اور مرچ کے ساتھ ساتھ کالے نمک کے ساتھ ملے جلے مصالحہ جات کو دیکھا۔ یہ بات قابل غور ہے کہ چینی مارکیٹ میں 'سرٹیفیکیشن آف اوریجن آف پاکستان' ہمالیائی گلابی نمک کا مستند شناختی نشان بن رہا ہے۔ دوسرے ممالک کی جانب سے پاکستانی مصنوعات کی غیر مجاز فروخت کو روکنے کے لیے  پاکستان نے اس سال اعلان کیا کہ گلابی نمک کو جغرافیائی اشارے کے ساتھ بطور پروڈکٹ رجسٹر کیا گیا ہے۔  پاکستان نے اپنی مقامی مصنوعات کے تحفظ، جعلی مصنوعات سے نمٹنے اور غیر ملکی منڈیوں میں قیمتوں کو یقینی بنانے کے لیے  جغرافیکل انڈیکیشن  ایکٹ 2020   بھی نافذ کیا۔ ہمالیائی نمک کو ایک بار ہندوستان جیسے ممالک نے بڑی مقدار میں درآمد کیا تھا، پھر اسے گلابی نمک بنا کر پوری دنیا میں فروخت کیا جاتا تھا۔ چینی اور پاکستانی تجارتی کمپنیوں کے درمیان براہ راست تعاون نہ صرف پاکستانی گلابی نمک کی قیمتوں میں اضافہ کر سکتا ہے بلکہ چینی صارفین کو اچھی قیمتوں پر مصنوعات حاصل کرنے کا موقع بھی فراہم کر سکتا ہے۔ تیانجن کے خریدار نے بتایا کہ اس نے ابتدا میں کینیڈا سے گلابی نمک خریدا تھا جو پاکستان میں بھی تیار ہوتا تھا۔ ''اگر ہم  سی آئی آئی ای  کے ذریعے پاکستانی سپلائرز سے رابطہ کر سکتے ہیں، تو ہمیں امریکہ یا کینیڈا سے خریداری کرنے کی ضرورت نہیں ہے، اور قیمت گر جائے گی۔  عام طور پر، چینی مارکیٹ میں ہمالیائی راک سالٹ کی مصنوعات کی فروخت میں تیزی آرہی ہے۔ چین کے کسٹمز امپورٹ اینڈ ایکسپورٹ ٹیرف کی گھریلو ذیلی زمرہ جات پر تشریحات کے مطابق ہمالیائی راک سالٹ 25010019 کے زمرے میں آتا ہے، قابل اطلاق موسٹ فیورڈ نیشن ٹیکس کی شرح اور عمومی ٹیرف کی شرح دونوں 0  فی صد  ہیں، اور اس کی ویلیو ایڈڈ ٹیکس کی شرح 13  فی صد  ہے۔ چینی کسٹمز کے اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ 2019 کے مقابلے میں 2020 میں چین کی طرف سے پاکستان سے درآمد کردہ دیگر  سالٹ  (HS CODE: 25010019) کی کل مقدار میں 29 فیصد اضافہ ہوا ہے۔جنوری سے ستمبر 2021 تک، چین کی درآمدی ترقی کی شرح میں مزید تیزی آئی، جس میں سالانہ  60 فیصد سے زیادہ اضافہ ہوا، جو پاکستان سے چین کی ہمالیائی نمک کی مصنوعات کی درآمد کی شرح نمو کی بھی تصدیق کرتا ہے۔ چین پوری دنیا کے ساتھ مارکیٹ کے مواقع کو مضبوطی سے شیئر کرے گا۔ اشیا اور  سروسز میں ہماری سالانہ درآمد کی قیمت تقریباً 2.5 ٹریلین امریکی ڈالر ہے۔ یہ سب ایک بہت بڑی مارکیٹ پیش کرتا ہے۔ ''تجارت کی متوازن ترقی'' چینی صدر شی جن پنگ نے ویڈیو کے ذریعے چوتھی سی آئی آئی ای کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ شی کی تقریر نے پڑوسی ممالک سے درآمدات بڑھانے اور سلک روڈ ای کامرس کو فروغ دینے کے چین کے عزم کو بھی ظاہر کیا ہے۔ چین میں پاکستانی سفیر معین الحق کا خیال ہے کہ آئندہ تین سے پانچ سالوں میں چین کو پاکستان کی برآمدات دوگنی ہو جائیں گی۔ جبکہ چینی اور پاکستانی تاجر چین میں پاکستان کے ہمالیائی راک سالٹ کی مارکیٹ کے امکانات کے بارے میں پراعتماد ہیں۔ ژو کی نظر میں سی آئی آئی ای کے ذریعے کم  مقدار میں سامان درآمد کرنے کی کوشش کے بعد، چینل کھول دیا گیا ہے. ''6 نومبر کو، ہم نے کئی ایجنٹوں  کے ساتھ دستخط کیے تھے۔ پانچ بڑے اداروں نے صبح کے وقت ہمارے ساتھ تعاون کرنے کی تجویز پیش کی۔ مستقبل میں  ہم بڑے پیمانے پر گلابی نمک درآمد کریں گے اور چینل کی بنیاد پر مزید مصنوعات درآمد کریں گے ۔زبیر نے کہا تقریباً پانچ سال کی تلاش کے بعد  ہم نے پایا کہ چینی مارکیٹ میں سالٹ  لیمپ کے بارے میں بہت مثبت تاثرات ہیں۔ ہمارے پاس فی الحال شنگھائی میں پانچ فزیکل اسٹورز ہیں اور ہم WeChat کے ذریعے کاروبار چلا رہے ہیں۔ ہم  اس سال کے آخر میں  Taobao.com پر ایک اسٹور کھولنے کا ارادہ بھی رکھتے ہیں۔  چین میں ہمالیائی راک سالٹ کی مصنوعات کے سپلائرز کی تیزی سے بڑھتی ہوئی ترقی کے ساتھ، زبیر جیسے سپلائی کرنے والوں کو  تیزی سے آگے بڑھنا پڑا ہے۔

  • comments
  • give_like
  • collection
Edit
More Articles