En

جنوری تا اپریل 2022 میں پاکستان کی چین کو چاول کی برآمدات 225 ملین ڈالر سے تجاوز کر گئیں

By Staff Reporter | Gwadar Pro Jun 3, 2022

بیجنگ (گوادر پرو)  جنرل ایڈمنسٹریشن چین کے مطابق رواں سال کے پہلے چار ماہ  میں پاکستان کی چین کو چاول کی برآمدات 225.52 ملین ڈالر سے تجاوز کر گئیں، جبکہ ٹوٹے ہوئے چاول میں گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 40.27 فیصد اضافہ دیکھا گیا ۔

اگرچہ کووڈ-19 وبائی بیماری نے اپریل اور مئی کے مہینوں کو متاثر کیا، 2022 کے پہلے چار مہینوں کے دوران دو طرفہ تجارت میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔ چین نے پاکستان سے 601,574.052 ٹن سے زیادہ مختلف قسم کے چاول درآمد کیے (جس کی مالیت225.52 ڈالرسے زیادہ ہے)، جو کہ 12.45 فیصد زیادہ ہے۔ ذرائع نے گوادر پرو کو بتایا کہ حجم کے لحاظ سے جبکہ گزشتہ سال اسی عرصے میں یہ 534,946.42 ٹن تھا۔

ہائیفی مئیر آپٹو الیکٹرونک ٹیکنالوجی انٹرنیشنل کے سیلز مینیجر مائیکل (گائو) نے گوادر پرو کو بتایا کہ چینی ٹیکنالوجی نے پاکستان کو چاول کی پروسیسنگ میں پیداوار بڑھانے اور اعلیٰ معیار کو برقرار رکھنے میں مدد کی۔

مائیکل نے مزید کہا آج تک تقریباً 1,000 میئر کلر سورٹرز پاکستان میں کام کر رہے ہیں۔ ہماری فروخت کا حجم ہر سال بڑھ رہا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ چین کو چاول کے تقریباً تمام اہم برآمد کنندگان نے اپنی چھانٹی والی مشینیں استعمال کیں اور اپنی مصنوعات استعمال کرکے اطمینان کا اظہار کیا، اس سے یہ بھی ظاہر ہوتا ہے کہ چین کو چاول کی برآمد ہر سال بڑھ رہی ہے۔

گاو نے کہاہمارے پاس پاکستان میں مجاز ایجنٹ ہیں؛ ان کے پاس ایک پیشہ ور سروس ٹیم ہے۔ دریں اثنا، مشین کو وائی فائی کے ذریعے منسلک کیا جا سکتا ہے، اور ہم ریموٹ سروس پیش کرتے ہیں، ہم چین میں کمپیوٹر پر مسائل بھی چیک کر سکتے ہیں۔

پاکستانی کاروباری اداروں نے یہ بھی کہا کہ وہ بہترین معیار کے خام چاول حاصل کر رہے ہیں اور بہترین پیداوار  کے لیے جدید ترین ملنگ مشینیں نصب کر رہے ہیں۔ چینی ٹیکنالوجیز انہیں اچھے نتائج حاصل کرنے میں مدد کرتی ہیں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ چاول کے 53 پاکستانی ادارے جنرل ایڈمنسٹریشن آف کسٹمز P.R.C کی منظوری کی فہرست میں شامل ہیں۔

  • comments
  • give_like
  • collection
Edit
More Articles