En

پاکستانی ٹیم کی بیجنگ سرمائی اولمپکس کے لیے چینی عوام کی تعریف

By Staff Reporter | Gwadar Pro Feb 15, 2022

بیجنگ (چائنہ اکنامک نیٹ) پاکستانی ٹیم  نے ہر جگہ چینی عوام کی جانب سے ملنے والی محبت کو سراہا، سرمائی اولمپکس کی افتتاحی تقریب میں چینی شائقین کی جانب سے پاکستانی  ٹیم  کا پرتپاک استقبال اس بات کا ثبوت ہے کہ آہنی    دوستی کی جڑیں  دونوں ممالک کے عوام کے دل میں گہری ہیں، ان خیالات کا اظہار  پاکستانی ہیڈ کوچ محمد قمر مرزا نے کیا۔

 محمد قمر مرزا نے چائنہ اکنامک نیٹ کو بتایا کہ جیسا کہ ہم سب جانتے ہیں، پاکستان اور چین اچھے دوست ہیں۔ ہمیں چینی لوگوں کی طرف سے بہت گرمجوشی سے پذیرائی ملی، انہوں نے جھنڈوں اور پنوں کے تبادلے کی درخواست کی۔ مزید برآں، چینی سامعین کی طرف سے پاکستانی ٹیم  کا پرتپاک استقبال کیا گیا۔ افتتاحی تقریب کے دوران ایک بار پھر یہ ظاہر ہوا کہ مضبوط دوستی دونوں ممالک کے عوام کے دلوں میں گہری ہے۔

سی ای این کے ساتھ ایک خصوصی انٹرویو میں کوچ محمد قمر مرزا نے بیجنگ اولمپکس میں شرکت کے حوالے سے ٹیم کیسا محسوس کر رہی ہے اور وہ کس قسم کی سہولیات سے لطف اندوز ہو رہے ہیں کے سوال  پر اپنے جواب میں کہا  ہم بیجنگ   سرمائی اولمپکس 2022 میں پاکستان کی نمائندگی کرنے کے لیے واقعی پرجوش ہیں۔ بیجنگ اولمپکس 2022 کے مقامات کے لیے بنیادی ڈھانچے کی ترقی اور تنظیمی تیاری انتہائی قابل تعریف ہے۔ ہم یہاں تمام سہولیات سے لطف اندوز ہو رہے ہیں۔

مختلف قسم کی ثقافت اور کھانے کی عادات کو مدنظر رکھتے ہوئے بیجنگ سرمائی اولمپکس کے لیے کھانے کا خصوصی انتظام کیا گیا ہے۔ پاکستانی کوچ نے کہا کہ ٹیم  چینی کھانوں سے لطف اندوز ہو کر خوش ہے۔

 یہاں کا کھانا واقعی بہت اچھا ہے، خاص طور پر چینی ترکیب میں مچھلی اور نوڈلز شاندار ہیں۔ مزید یہ کہ سبزیوں، انڈوں اور گوشت سے تیار کردہ چینی چاول پاکستانی کھانوں   سے مختلف ہیں۔

پاکستانی اسکواڈ کے کوچ محمد قمر مرزا نے کہا کہ یہاں حاصل ہونے والے تجربے سے پاکستان میں استفادہ کیا جائے گا اور اس سے کھلاڑی کی صلاحیتوں کو نکھارنے میں مدد مل سکتی ہے۔

قمر نے کہا یہاں اعلیٰ سطح کے اسکائیرز اور پیشہ ور افراد کے ساتھ بات چیت کرکے، ہم نے بہت کچھ سیکھا ہے اور ہم پاکستان میں اپنے کھلاڑیوں کے ساتھ اپنا تجربہ شیئر کریں گے۔ 

ان کا مزید کہنا تھا کہ عالمی سطح کے ایتھلیٹس کے سامنے آنے کے بعد وہ سمجھتے ہیں کہ پاکستان کو عالمی معیار کے ایتھلیٹس سے مقابلے کے لیے انفراسٹرکچر کو بہتر کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں خاص طور پر شمالی علاقوں میں بہت زیادہ ٹیلنٹ موجود ہے۔ ہمیں اپنے ملک میں سرمائی کھیلوں کے لیے صرف ایک اچھے انفراسٹرکچر کی ضرورت ہے۔ اگر ہمارے پاس بہتر سہولیات ہوں تو ہم اپنے کھلاڑیوں کو تربیت دے سکتے ہیں۔

گلگت بلتستان کے ایک گاؤں نلتر سے تعلق رکھنے والے پاکستانی ایتھلیٹ محمد کریم بیجنگ سرمائی اولمپکس میں شرکت کرنے والے واحد پاکستانی سکئیر ہیں۔ وہ پہلے ہی روس کے شہر سوچی اور پیونگ چانگ، جنوبی کوریا میں ہونے والے دو سرمائی اولمپکس میں شرکت کر چکے ہیں۔

کریم 16 فروری کو یانگنگ ڈسٹرکٹ میں چائنا نیشنل الپائن سکینگ سنٹر میں ڈھلوانوں پر جائیں گے۔

  • comments
  • give_like
  • collection
Edit
More Articles