En

پاکستان اور بیلٹ اینڈ روڈ الائنس کے مابین زرعی شعبے میں تعاون کی  مفاہمتی یادداشت پر دستخط

By Staff Reporter | Gwadar Pro Dec 21, 2021

بیجنگ  (گوادر پرو)سندھ ایگریکلچر یونیورسٹی (ایس اے یو)، یونیورسٹی آف ایگریکلچر فیصل آباد (یو اے ایف)، پیر مہر علی شاہ ایریڈ ایگریکلچر یونیورسٹی راولپنڈی (پی ایم  اے ایس۔ اے اے یو آر)، ستار ایگرو اینڈ لائیو اسٹاک لمیٹڈ سمیت    4 پاکستانی اداروں   نے  بی آر آئی    ممالک کے ساتھ  کوالٹی  ایگریکلچر میں تعاون   بڑھانے کے لیے ''بیلٹ اینڈ روڈ الائنس فار انٹرنیشنل کوالٹی  ایگریکلچرل کوآپریشن انیشیٹو'' کے ساتھ مفاہمتی  یادداشتوں پر دستخط کیے ہیں۔

 جی این ایس ایس  اور  ایل بی ایس  ایسوسی ایشن آف چائنا (جی ایل اے سی ) کی میزبانی میں  ''بیلٹ اینڈ روڈ انٹرنیشنل کوالٹی  ایگریکلچر کوآپریشن'' پر بین الاقوامی سیمینار سمٹ 2021 کا  حال ہی میں کامیابی کے ساتھ انعقاد کیا گیا جس کے دوران ''بیلٹ اینڈ روڈ الائنس فار انٹرنیشنل کوالٹی  ایگریکلچرل کوآپریشن انیشیٹو'' جاری کیا گیا  اور 20 ایم او یوز، لیٹرز آف انٹینٹ (ایل او آئی)، لیٹرز آف سپورٹ (ایل او ایس) موصول ہوئے۔
 
ایسوسی ایٹ پروفیسر فارم ڈیپارٹمنٹ آف ایگرونومی،  پی ایم  اے ایس۔ اے اے یو آر  پاکستان   محمد نوید طاہر  نے  سربراہی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے  کہا کہ  بی آر آئی  اس صدی کے بہترین آئیڈیاز میں سے ایک ہے جسے چینی حکومت نے شروع کیا ہے۔ وہ مختلف قسم کی ٹیکنالوجی کا اشتراک کر رہے ہیں، بشمول چین کا  بائیدو نیویگیشن سسٹم (BDS) پارٹنر ممالک کے ساتھ اور یہ شاندار سمٹ ہمیں ایک دوسرے کے ساتھ ٹیکنالوجی اور خیالات کا اشتراک کرنے میں مدد کر تی ہے۔
 
چائنیز اکیڈمی آف انجینئرنگ کے ماہر تعلیم اور ساؤتھ چائنا ایگریکلچرل یونیورسٹی کے سابق نائب صدر پروفیسر لو شیوین نے نشاندہی کی کہ کوالٹی ایگریکلچر اپنے نمایاں فوائد اور تیز رفتار ترقی کے ساتھ دنیا میں زرعی ترقی کے رجحانات میں سے ایک بن گئی ہے۔
 
چین نے   کوالٹی ایگریکلچرپر تحقیق میں نمایاں پیش رفت کی ہے، خاص طور پر     کوالٹی ایگریکلچر اور ڈیجیٹل زراعت پر انحصار کرنے والے بغیر پائلٹ فارموں کی تلاش اور مشق میں۔ انہوں نے مزید کہا کہ  کوالٹی ایگریکلچر میں بیلٹ اینڈ روڈ ممالک کے ساتھ تبادلے اور تعاون کو مضبوط کرنا  بڑی  اہمیت کا حامل ہے۔ 
 
 اس موقع پر چین، پاکستان، منگولیا، روس، لاؤس، ملائیشیا، مصر، سنگاپور، ویت نام، کمبوڈیا و دیگر سمیت 10 سے زائد ممالک کے ماہرین نے  کوالٹی ایگریکلچر، سمارٹ  ایگریکلچر میں بین الاقوامی تعاون پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے  آن لائن سیمینار میں شرکت کی۔

  • comments
  • give_like
  • collection
Edit
More Articles