En

چین کا پاکستان سے دودھ کی درآمد پر غور

By Staff Reporter | Gwadar Pro Nov 14, 2021


شنگھائی:پاکستان میں ڈیری مصنوعات کی پیداوار اور معیار بہت زیادہ ہے اور اس  میں  بڑی صلاحیت ہے۔ ہم بیلٹ اینڈ روڈ انیشیٹو کی بنیاد پر ڈیری تعاون کو تلاش کرنے کے خواہاں ہیں اور ان کے ساتھ کچھ بات چیت ہوئی ہے۔ ہم  پاکستان کی ڈیری انڈسٹری کے بارے میں مزید جا ن کاری  اور اس میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینا   پسند کر یں گے ۔ یہ بات   چوتھی چائنا انٹرنیشنل امپورٹ ایکسپو (CIIE)  کے دوران برائٹ ڈیری اینڈ فوڈ کمپنی لمیٹڈ    جو کہ چین کے سب سے بڑے ڈیری گروپوں میں سے ایک ہے کے اوورسیز بزنس مینیجر لی یو نجی نے  گوادر پرو کو بتا ئی۔ انہوںنے کہا  چینی کمپنیاں پاکستانی دودھ  کا چینی مارکیٹ میں آنے  پر خیرمقدم کرتی ہیں جس سے پاکستان کی اقتصادی ترقی، صنعتی اپ گریڈنگ اور صنعتی سلسلہ کی توسیع کو فائدہ پہنچے گا۔ ساتھ ہی یہ چینی صارفین کی اعلیٰ معیار کی دودھ کی مصنوعات کی مانگ کو بھی پورا کرے گا۔ لی نے مزید کہا کہ چین میں ڈیری مصنوعات کی مانگ بہت زیادہ ہے  اور یہ بنیادی مصنوعات جیسے دودھ سے آگے بڑھ گئی  ہیں ۔ اگرچہ چین میں صارفین کی مارکیٹ مسلسل تبدیل ہو رہی ہے، لیکن صحت کا رجحان بدلنے والا نہیں ہے۔ انہوںنے کہا  ''ہمارے ڈیٹا اور تجزیے کے حوالے سے، ہمیں یقین ہے کہ  مستقبل میں .  پنیر اور کریم دنیا میں سب سے تیزی سے بڑھنے والے دو زمرے ہونے جا رہے ہیں  ۔انہوں نے کہا کہ بچوں کے دودھ کے پاؤڈر، بڑے پیکجز پاؤڈر، اور مائع دودھ کے علاوہ، ہائی ویلیو ایڈڈ ڈیری مصنوعات جیسے لسی ، پنیر، مکھن اور کریم کی بھی چینی مارکیٹ میں بہت مانگ ہے۔ اگر صنعتی سلسلہ پاکستان میں ٹرانسپلانٹ کیا جا سکتا ہے، تو اس سے دونوں ممالک کی دودھ کی صنعت کے لیے مفید صورت حال کی توقع ہے۔ چوتھی سی آئی آئی ای پر ڈیری مصنوعات کو بہت زیادہ توجہ ملی۔ اس موقع پر سی آئی آئی ای کا ڈیری انڈسٹری فورم بھی کامیابی سے منعقد ہوا۔ تقریب میں کمیٹی نے چین کی ڈیری انڈسٹری پر ایک رپورٹ بھی جاری کی، جس میں بی آر آئی کے ساتھ ڈیری انڈسٹری میں تعاون بڑھانے پر زور دیا گیا۔رپورٹ کے مطابق چینی مارکیٹ میں ڈیری مصنوعات کی بہت زیادہ مانگ دکھائی گئی ہے۔ 2020 میں  چین نے 3.39 ملین ٹن ڈیری مصنوعات درآمد کیں، جو کہ سالانہ 10.2 فیصد اضافہ ہے۔ درآمدات کا حجم 12.4 بلین ڈالر ہے، جو کہ سالانہ  6.5 فیصد زیادہ ہے۔ 2011 سے 2020 تک  چین کی ڈیری درآمدات میں 12.3 فیصد کی کمپاؤنڈ سالانہ ترقی کی شرح سے اضافہ ہوا، اور یہ طلب مسلسل بڑھ رہی ہے۔ اعلیٰ معیار  کے دودھ کی مصنوعات کی چین کی متنوع مانگ نے پاکستان کی ڈیری انڈسٹری کے لیے ایک نیا آپشن بھی پیش کیا ہے۔اس وقت چین کی ڈیری درآمدات زیادہ تر نیوزی لینڈ (40.44  فی صد)، نیدرلینڈز (17.15  فی صد )، آسٹریلیا (7.38  فی صد ) اور دیگر یورپی اور امریکی ممالک سے ہیں۔ اس کے برعکس، چینی ڈیری کمپنیاں پاکستان جیسے بیلٹ اینڈ روڈ ممالک میں اعلیٰ معیار کے دودھ کے ذرائع کو استعمال کرنے کی کوشش کر رہی ہیں۔

  • comments
  • give_like
  • collection
Edit
More Articles