En

پاک چین سرحدی تجارت  سے مزید استفادہ کیا جائے گا: بدر الزمان

By Staff Reporter | Gwadar Pro Aug 29, 2021

اورمچی :بیجنگ میں پاکستانی سفارت خانے کے کمرشل  قونصلر بدر الزمان نے کہاہے کہ چین  کا  سنکیانگ ایغور خود مختار خطہ چین پاکستان  سرحدی تجارت میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔  آم اور  ترشاوا پھلوں کے علاوہ مزید کاروباری مواقع تلاش کیے جائیں گے۔ گوادر  پرو کے مطابق  یہ بات انہوںنے ای  اے  سی ٹی ایکسپو 2021 کے تحت "  مہمان اعزاز کیلئے اقتصادی اور تجارتی منصوبوں کے  کلاڈ ڈائیلاگ " کے عنوان سے  منعقدہ سیمینار میں کہی  ۔ چائنا یوریشیا ایکسپو اور ٹریڈ ڈویلپمنٹ بیورو، چین کی وزارت تجارت، 2021 آن لائن (چائنا) یوریشیا کموڈٹی اینڈ ٹریڈ ایکسپو (ای اے سی ٹی ایکسپو 2021) 25 اگست کو شروع ہوئی  جس میں     پاکستان نے  بطور مہمان   اعزاز   شرکت کی  افتتاحی تقریب میں چین میں پاکستانی سفیر معین الحق نے کہا  کہ ایکسپو پاکچین تعاون اور تجارت کو مستحکم  کرنے میں مثبت کردار ادا کرے گی اور چین کے سنکیانگ ایغور خود مختارعلاقے  کے ساتھ پاکستان کے تعاون کو نئی تحریک دے گی۔ کمرشل  قونصلر بدر الزمان نے کہا  ہمیں سنکیانگ اور پاکستان کے شمالی حصوں کے درمیان سڑکوں کا جال مل گیا ہے۔ اس کے علاوہ  سرحد کے دونوں اطراف ہم نے  گودام قائم کیے ہیں جو برآمد کنندگان اور درآمد کنندگان کو فائدہ پہنچا سکتے ہیں۔  بدر نے مزید کہا کہ24 نومبر 2006 کو چائنا پاکستان فری ٹریڈ ایگریمنٹ (سی پی ایف ٹی اے)پر دستخط  ہوئے اور جولائی 2007 میں یہ  نافذ ہوا اس کے بعد  سے خنجراب پاس کے ذریعے پاکستان اور چین کے درمیان سرحدی تجارت میں  اضافہ ہوا ۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کے مطابق جب دونوں ممالک نے سی پی ایف ٹی اے پر دستخط کیے تو دوطرفہ تجارت میں تبدیلی دیکھنے میں آئی،  جیسا کہ  کاروباری اداروں کے لیے زیادہ کاروباری مواقع اور سہولتیں لائی گئی ہیں اور صارفین کو زیادہ فوا ئدملے ہیں۔ بدر نے کہا کہ  ہمارے پاس  تیزی سے بڑھتے ہوئے شعبوں میں سے ایک سمندری غذا ہے۔ سمندری غذا کے علاوہ،چینی مارکیٹ  میں  پاکستان کی  معدنیات اور دھاتوں کی  بڑی  مانگ  ہے۔ بدر نے کہا  کہ متعدد مواقع دستیاب ہیں اور  انہوںنے ایکسپو میں  تمام سرمایہ کاروں،  ٹریڈر  اور تاجروں کو مواقع تلاش کرنے کی دعوت دی ۔ یہ  ایکسپو  سلک روڈ  ٹریڈ  پلیٹ فارم کی تعمیر  اور معاشی تعاون  کے  اجتماعی  فوائد  کے  فروغ کے عنوان  سے  25 اگست 2021 سے 24 اگست 2022 تک  جاری رہے گی

  • comments
  • give_like
  • collection
Edit
More Articles