En

تھری  گورجز ونڈ فارم کے سی ایف او  کا  سی پیک کو ایک رول ماڈل بنانے کا وعدہ

By Staff Reporter | China Economic Net Jun 12, 2021

بیجنگ:تھری  گورجز ونڈ   فارم پاکستان کے چیف فنانشل آفیسر عادل اشرف نے کہا  ہے کہ  میں چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک)،  پاک چین دوستی اور پاکستان کی تاریخی ترقی  کی  کامیابی کے لئے کردار ادا کرنے کو تیار ہوں،  چائنہ اکنامک نیٹ کے مطابق اشرف نے یہ بات  دیگر 17 افراد کے ساتھ سی پیک کے بہترین  مہارت کے حامل  پاکستانی ملازم   کا  ایوارڈ  حاصل  کرنے  کے موقع پر کہی  ۔اشرف نے  تھری  گورجز ونڈ فارم پاکستان میں شمولیت اختیار کرنے کے بعد     اپنی عمدہ پیشہ ورانہ صلاحیت   سے بہت سے فنانس   اور   ٹیکس کے معاملات نمٹا  ئے   ، متعلقہ خطرات کو ختم  کیا  ، اخراجات کو بچایا   اور کمپنی کے حقوق اور مفادات کا تحفظ کیا  ۔ 2020 میں  پاکستان میں  کووڈ 19 کی وبا پھیلی ہوئی تھی۔ اگرچہ کمپنی نے عملے کو گھر سے کام کرنے کی  اجازت  دی    لیکن اشرف اور ان کی ٹیم  حسب معمول کام  پر آتی رہی ،کیونکہ فنانشل ا سٹاف    کو دفتر اور بینک میں کام  کرنا پڑتا تھا تاکہ کمپنی کو اچھی طرح سے کام کر سکے۔ ایک بار   ٹیم کیکچھ ساتھیوں نے شکایت کی کہ فنانشل ٹیم کے کارکن کو انفیکشن کا خطرہ اور یہاں تک کہ اوور ٹائم کام کرنے کی ضرورت کیوں پیش آئی جبکہ  زیادہ تر کارکن سوشل ڈسٹنس  پر عمل کرتے ہوئے    کام کرتے تھے ۔اشرف نے  ان شکایات کا پرسکون، منظم انداز میں تھوڑی سنجیدگی کے ساتھ جواب د یا کہ  کمپنی کو  جتنا مشکل ہے، اتنا ہی وہ   ہماری اصل قدر کی عکاسی کرسکتی ہے۔ جب پاکستان کو  انتہائی مشکل وقت کا سامنا کرنا پڑتا ہے تو ہمارے چینی ساتھی ہر طرح سے ہمارے ساتھ کھڑے  ہوتے ہیں ۔ اسی لیے  ہم کو  بھی کام  کیلئے اپنے آپ کو وقف کرنا چاہیے  ۔  فنانشل ٹیم نے کمپنی کے منصوبوں کے لئے بڑا حصہ ڈالا  اور قربانیاں دیں۔ اپنی پیشہ وارانہ قابلیت، اعلی ذمہ داری، اور اچھی کارکردگی کے لئے  اشرف 2020 میں سی پیک کا  بہترین  مہارت  کا  حامل  پاکستانی   کارکن بن گیا ہے۔ اشرف کے نزدیک سی پیک غیر مانوس  نہیں ہے، اسے سی پیک کی ترقی کے بارے میں گہری سمجھ ہے۔ اشرف کا خیال ہے کہ سی پیک نہ صرف پاکستان  کی  چین اور دوسرے ممالک سے سرمایہ کاری  راغب کرنے میں مدد فراہم کرے گا بلکہ نقل و حمل، صنعت اور تجارت کی ترقی کو بھی فروغ دے گا اور پاکستانیوں کے لئے روزگار کے زیادہ مواقع پیدا کرے گا۔ دراصل  پاکستان کو بھی  ترقیاتی مواقع کی    کمی  کی وجہ سے دوسرے ترقی پذیر ممالک کی طرح  باکمال  لوگوں  کی بیرو ن ملک ہجرت   کا سامنا کرنا پڑا  ۔ جبکہ سی پیک کے نفاذ نے اشرف سمیت متعدد پاکستانیوں کی امیدوں کو بھڑکا دیا ہے۔ انہوں نے پُر عزم طور پر بیرون ملک ہجرت کا نظریہ ترک کیا   اور سی پیک کے فریم ورک کے تحت منصوبوں پر مشغول ہوکر اپنی مادر وطن کی تعمیر میں اپنا کردار ادا کرنے کا عزم کیا  ۔ انہوں نے   پاکستان کی بے لوث مدد  پر چینی دوستوں کا  شکریہ ادا کیا ۔ سی پیک نے پاکستان کو ٹھوس فوائد پہنچائے ہیں۔  اس کے تحت منصوبوں کے لئے کام کرنا میرے لئے بہت اعزاز کی بات ہے۔  میرے نزدیک یہ نہ صرف ایک چینی کمپنی میں کام ہے   بلکہ وہ پاکستان کی تعمیر میں بھی کام کررہی ہے۔ یہ الفاظ انہوں نے تب ادا  کیے جب  اس نے  2016 میں تھری  گورجز ونڈ فارم پاکستان  میں  نوکری  کیلئے انٹرویو  دیا  تھا۔

  • comments
  • give_like
  • collection
Edit
More Articles